آسی2

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search

آسی{آ + سی} (سنسکرت)

آشا آس آسی

سنسکرت زبان میں اصل لفظ آشا ہے لیکن اردو زبان میں اس سے ماخوذ آس بطور اسم مستعمل ہے اور آس کے ساتھ ی بطور لاحقۂ صفت لگانے سے آسی بنا جوکہ بطور اسم صفت مستعمل ہے۔ اردو میں سب سے پہلے 1679ء میں "دیوان سلطان" میں مستعمل ملتا ہے۔

صفت ذاتی (مذکر - واحد)

جمع ندائی: آسِیو {آ + سِیو (و مجہول)}

جمع غیر ندائی: آسِیوں {آ + سِیوں (واؤ مجہول)}

معانی[ترمیم]

آس رکھنے والا، امیدوار، آس والا۔

؎ پن مجکوں اپس کے پاس رکھنا

آسی کوں نکو نراس رکھنا [1]

مترادفات[ترمیم]

پُرْاُمِّید آس مَنْد

متضادات[ترمیم]

مایُوس

حوالہ جات[ترمیم]

    1   ^ ( 1700ء، من لگن، 18 )