آمریت

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search

آمِرِیَّت {آ + مِریْ + یَت} (عربی)

ا م ر آمِرِیَّت

عربی زبان میں ثلاثی مجرد سے اسم فاعل آمِر کے ساتھ عربی قواعد کے تحت یّ بطور لاحقۂ نسبت اور پھر ت بطور لاحقۂ اسمیت لگانے سے آمریت بنا۔ اردو میں بطور اسم مستعمل ہے۔ سب سے پہلے 1949ء میں "آثار ابوالکلام" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم کیفیت (مؤنث - واحد)

جمع: آمِرِیَّتیں {آ + مِریْ + یَتیں (ی مجہول)}

جمع غیر ندائی: آمِرِیَّتوں {آ + مِریْ + یَتوں (و مجہول)}

معانی[ترمیم]

مطلق العنان فرماں روا کی حکومت، آمرانہ نظام حکومت، ڈکٹیٹرشپ، جمہوریت کی ضد۔

"ہٹلر نے جمہوریت کے نام سے سامراج کے فریب کی نقاب پارہ پارہ کر دی اور جرمن آمریت اور فسطائیت کو دنیا پر مسلط کرنے کا دعویٰ پیش کر دیا۔" [1]

مترادفات[ترمیم]

حُکْمَرَانی حاکمِیَّت


رومن[ترمیم]

aamiriyyat

تراجم[ترمیم]

انگریزی: Dictatorship

حوالہ جات[ترمیم]

   1    ^ ( 1949ء، آثار ابوالکلام، عبدالغفار، 93 )