آڑ

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search

آڑ {آڑ} (سنسکرت)

آورڑ آڑ

سنسکرت زبان میں اصل لفظ آورڑ ہے لیکن اردو زبان میں داخل ہو کر آڑ مستعمل ہوا۔ سب سے پہلے 1564ء میں حسن شوقی کے دیوان میں مستعمل ملتا ہے۔


اسم نکرہ (مذکر، مؤنث - واحد)

جمع: آڑیں {آ + ڑیں (یائے مجہول)}

جمع غیر ندائی: آڑوں {آ + ڑوں (واؤ مجہول)}

معانی[ترمیم]

اوٹ، اولٹ، پردہ، وہ چیز جس کے پیچھے چھپ رہیں۔

"پرندوں کو انڈے دینے کے لیے تنہائی کی اور آڑ کی جگہ درکار ہوتی ہے۔" [1]

2. حیلہ، بہانہ، (جو اصلیت کو چھپانے کے لیے ہو)۔

"جس قدر گنجائش فریب اور دغا بازی کی مذہب کی آڑ میں ہے کسی شعبہ زندگی میں نہیں۔" [2]

3. حفاظت، پناہ، پشت پناہی، مدد۔

"جو لوگ واقعی ..... دوست پرور ہوتے ہیں ..... ان کے پس ماندوں کو آڑ دینے والوں کی کمی نہیں۔" [3]

4. ٹیک، تکیہ، ٹیکن۔

"سر جو ٹکرایا تو دیوار کی آڑ لگا کر بیٹھ گئی۔" [4]

5. رکاوٹ، سد راہ، حائل۔

؎ بہت واں سے نزدیک ترتھا پہاڑ

فقط بیچ میں ایک جنگل تھا آڑ [5]

حد فاصل۔

"جنتیوں اور دوزخیوں کے بیچ میں ایک آڑ ..... ہو گی۔" [6]

6. ضمانت یا کفالت۔

"اس قصبے میں جن حضرات اسلام کی جائیداد پر یہ نوبت جائیداد کے ضائع ہونے کی، بیع، رہن، آڑ سے آئی ہے وہ میرے ہی قرابت دار ہیں۔" [7]

7. شرم، حجاب۔

"دو بدو کہنے سننے سے ذرا سی آڑ اور تھوڑا سا لحاظ جو باقی ہے وہ بھی اٹھ جائے گا۔" [8]

8. ٹیڑھ، کجی، ترچھا پن۔

"عمارت میں آڑ آتی ہے تو آئے چھت میں رخنہ پڑتا ہے پڑے۔" [9]

9. { ہندو } کاجل کی ترچھی لکیر جو ہندو عورتیں اپنے ماتھے پر بندی کے نیچے کھینچتی ہیں۔

؎ اینگر کی دے ہوں لال ٹکلیا

اور دے ہوں کاری آڑواہی رسیاپے [10]

10. ایک قسم کے بوائے ہوئے اناج (ترکاری وغیرہ) میں دوسرے قسم کے اناج (یا ترکاری وغیرہ) کی آڑی پٹی (فرہنگ آصفیہ 150:1)

11. { برتن سازی } برتن کے کور کنارے سیدھے کرنے اور گڑھے گومڑے نکالنے کا(ٹھٹھیرے کا) ہتھوڑا جو چونچ کی شکل کا ہوتا ہے۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 26:3)

12. { موسیقی } ہاتھی دانت یا کسی اور چیز کی چھوٹی سی تختی جو سارنگی کے نچلے سرے (طبلی) کے اوپر تانت کے تاروں کو (طبلی) کی سطح سے ذرا اوپر اٹھائے رکھنے کے لیے لگی رہتی ہے اس کے اوپر تانت کے تار کھنچے ہوتے ہیں جس سے تار کی جھنکار صاف رہتی ہے، تاردان، ٹیک، گھوڑی۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 100:4)

13. { موسیقی } طبلہ کی تال میں لے کر ایک قسم جس میں کال پر ماترے گنے جاتے ہیں۔

"لے کواڑ ہو جاتی ہے، یہ لے آڑ سے آسان ہے۔" [11]

14. { لوہاری } چھا، لوہارکی بھٹی کے منہ کا پٹ جو اندر کی تپش کو روکتا ہے۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 1:8)

15. { معماری } یاڑ کی کھڑی لکڑی کا جھوک روکنے اور سہارنے والی ترچھی بندی ہوئی لکڑی، اڑنگا۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 90:1)

16. ڈھلان پر کھڑی ہوئی گاڑی کے پہیے کے نیچے لگانے کی روک جس سے گاڑی اپنی جگہ قائم رہے اور آگے یا پیچھے نہ ہٹے۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 104:5)

17. کھیٹ کی حد بندی کی منڈیر، مینڈ۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 3:6)

18. وہ لکڑی جو کواڑوں کو کھلنے سے روکنے کے لیے پس پشت ہوتی ہے۔دروازے کی لکڑی۔ (اصطلاحات پیشہ وراں، 22:1)

متغیّرات[ترمیم]

آڑھ {آ + ڑھ}، آر {آر}


معانی2[ترمیم]

صفت ذاتی [12]

پشت پناہ، مددگار۔

جمع: آڑیں {آ + ڑیں (یائے مجہول)}

جمع غیر ندائی: آڑوں {آ + ڑوں (واؤ مجہول)}

"مصیبت تو اسے ہے جس کی کوئی آڑ نہیں۔" [13]

2. ضامن، کفیل، جیسے : روپیہ تو قرض مل جائے گا لیکن کسی کو آڑ دینا پڑے گا۔


معانی3[ترمیم]

متعلق فعل

وقفے سے (وقت کا) فاصلہ دے کر۔

"تراش روزانہ واقع نہ ہو، بلکہ ایک دن آڑ۔" [14]

2. بچنے یا چھپنے کے لیے، پوشیدہ ہو جانے کی غرض سے

"اتنا سنا کہ کہیں دھگڑے کے پاس پکڑی گئیں لو بی بی یہ شہزادیاں ہیں جن کو محل کیا کوئی کونا آڑ بھی نصیب نہیں۔" [15]

مترادفات[ترمیم]

روک اوٹ گھُونْگھَٹ اَٹَک اوجھَل حِجاب بَرْزَخ قَنات سِکْرِین

مرکبات[ترمیم]

آڑ پاڑ، آڑ کَباڑ

روزمرہ جات[ترمیم]

آڑ آنا

؎ کہ آڑ آوینگا تیرے ایک اسود کہ پانی لینے سے ہونیگا تراسد [16]

آڑ بنانا

بہانہ ڈھونڈنا، حیلہ قرار دینا۔

"لیڈر کا کام محض اس قدر ہوتا ہے کہ ..... خود غرضیوں کے لیے آڑ بنائے۔" [17]

آڑ پڑنا

جھک جانا۔

؎ پڑے آو کر آڑ جوسی جیتے

مہا پنڈتاں ہور مجوسی جیتے [18]

آڑ پکڑنا

پناہ لینا، چھپ جانا۔

"آڑ پکڑ کر کھڑے ہوے ایسے مقام پر جہاں سے تقریر سنائی دے۔" [19]

سہارا لینا، ٹیک لگانا۔

"دونوں دوست درختوں ٹیلوں کی آڑ پکڑ کر مکان کے اندر پہنچے۔" [20]

بہانہ بنانا

"دوسری جگہ وہ اسی مذہب کی آڑ پکڑ کر دارالحرب میں سود بھی لینے لگے۔" [21]

آڑ توڑنا

حجاب اٹھانا، پردہ باقی نہ رکھنا یا اٹھا دینا۔

؎ کچھ منہ سے پھوٹیے تو سہی پھر نہیں کہ ہاں

آپس میں ہے حجاب کی جو آڑ توڑیے [22]

آڑ ڈھونڈنا

پناہ چاہنا۔

؎ دن کو تو میرے نالہ سوزاں بلند ہوں

ڈھونڈے فلک پہ مہر فلک ابر تر کی آڑ [23]

آڑ کرنا

ضمانت میں دینا، رہن کرنا۔

"میں نے دلی لالہ کے پاس مونچھ کا ایک بال آڑ کر کے دس رپئے ادھار لیے تھے۔" [24]

پناہ لینا۔

؎ کرنا سپر کی آڑ شجاعت سے دور ہے

رو کے جو وار تیغ کا منہ پر وہ سو رہے [25]

آڑ لینا

پناہ لینا، سہارا لینا۔

؎ مردوں کے واسطے ہے یہ ٹیکا کلنک کا

گھونگھٹ ہو عورتوں کا جو لوں میں سپر کی آڑ [26]

آڑ میں آنا

بیچ میں پڑنا، جیسے : جو چیز آڑ میں آئی سیلاب اسے بہا لے گیا۔ ضامن ہونا۔ (فرہنگ آصفیہ، 150:1)


رومن[ترمیم]

aarah

تراجم[ترمیم]

انگریزی :A covering; concealment; shelter; defence; buttress; a bar; a wall; a curtain; protection; prevention; interception; impediment

حوالہ جات[ترمیم]

    1   ^ ( 1924ء، پرندوں کی تجارت، 14 )
    2   ^ ( 1932ء، انور، 694 )
    3   ^ ( 1935ء، دودھ کی قیمت، 77 )
    4   ^ ( 1926ء، شرر، فلورا فلورنڈا، 161 )
    5   ^ ( 1847ء، مثنوی صیدیہ، 116 )
    6   ^ ( 1895ء، ترجمہ قرآن، نذیر احمد، 248 )
    7   ^ ( 1904ء، ماہ نامہ عصر جدید جون، 243 )
    8   ^ ( 1920ء، لخت جگر، 206:1 )
    9   ^ ( 1928ء، فنون، اپریل، 26 )
    10   ^ ( 1895ء، (پوربی گنواری) (فرہنگ آصفیہ، 150:1) )
    11   ^ ( 1927ء، نغمات الہند، 91 )
    12   ^ ( مؤنث - واحد )
    13   ^ ( 1935ء، گئودان، 308 )
    14   ^ ( 1907ء، فلاحۃ النخل، 243 )
    15   ^ ( 1882ء، طلسم ہوشربا، 667:1 )
    16   ^ ( 1771ء، ہشت بہشت، 143 )
    17   ^ ( فلسفہ اجتماع، 225 )
    18   ^ ( 1564ء، حسن شوقی، دیوان، 77 )
    19   ^ ( 1904ء، افتاب شجاعت، 174:3 )
    20   ^ ( 1933ء، یدقدرت، 36 )
    21   ^ ( 1940ء، مضامین رشید، 211 )
    22   ^ ( 1818ء، انشا، کلیات، 169 )
    23   ^ ( 1860ء، کیف، آئینہ ناظرین، 89 )
    24   ^ ( 1954ء، اپنی موج میں، آوارہ، 63 )
    25   ^ ( 1832ء، رند، 175:1 )
    26   ^ ( 1860ء، کیف، آئینہ ناظرین، 88 )