متجاوز

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search
مزید دیکھیے: متجاوز ہونا اور تجاوز

اردو[ترمیم]

اشتقاقیات[ترمیم]

مُتَجَاوِزْ عربی زبان کے ثلاثی مجرد کے باب سے مشتق اسم فاعل ہے اور اردو میں بطور صفت استعمال ہوتا ہے۔ اِس کا مادہ ج، و، ز ہے۔ اردو میں پہلی بار تحریری صورت میں 1837ء میں ’’ستہ ٔ شمسیہ‘‘ میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم[ترمیم]

متجاوز مذکر

  • حد سے آگے بڑھنے والا۔
  • اپنی حد سے گزر جانے والا۔
  • تجاوز کرنے والا۔