ٹیکن

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search

ٹیکَن {ٹے + کَن} (سنسکرت)

ترایا، ٹیک، ٹیکَن

سنسکرت سے ماخوذ اردو مصدر ٹیکنا سے مشتق حاصل مصدر ٹیک کے ساتھ ن بطور لاحقۂ اسم لگنے سے ٹیکن بنا۔ اردو میں بطور اسم مستعمل ہے۔ 1806ء میں "نورالہدایہ" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم نکرہ (مؤنث - واحد)

جمع: ٹیکَنیں {ٹے + کَنیں (یائے مجہول)}

جمع غیر ندائی: ٹیکَنوں {ٹے + کَنوں (واؤ مجہول)}

معانی[ترمیم]

1. اڑواڑ، تھونی، ٹیک، تکیہ گاہ۔

"ٹٹیوں پر چڑھی ہوئی انگور کی بیل کی .... ٹیکن اکھڑ جائے یا ٹوٹ جائے تو بیل .... زمین پر لگ جاتی ہے۔"، [1]

2. سہارا، ٹیک۔

"اس کو ٹیکن دے کر بٹھائے اور اس کے پیٹ کو نرم نرم ملے۔"، [2]

انگریزی ترجمہ[ترمیم]

pillar, prop, support

مترادفات[ترمیم]

سُتُون

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ( 1959ء، مقدرانسانی، 232 )
  2. ( 1806ء، نورالہدایہ، 164 )