حویلی

ویکی لغت سے
Jump to navigation Jump to search

حَویلی {حَوے + لی} (عربی)

عربی زبان میں اسم حوالی کا امالہ حویلی اردو میں بطور اسم استعمال ہوتی ہے۔ 1625ء کو "سیف الملوک و بدیع الجمال" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم نکرہ (مؤنث - واحد)

جمع: حَویلِیاں {حَوے + لِیاں}

جمع غیر ندائی: حَویلِیوں {حَوے + لِیوں (و مجہول)}

معانی[ترمیم]

1. شان دار مکان، بڑا اور پکا مکان (بیشتر جس کے گرد چار دیواری بھی ہوتی ہے)محل، محلسرا۔

"حویلی کے دالان میں سو کے قریب چار پائیاں بچھائی جا سکتی تھیں۔"، [1]

2. بیوی۔

"باقی کل نقد روپیہ کو جو اس وقت میرے پاس موجود تھے حسب سہام شرعی اپنی دونوں حویلیوں پر تقسیم کر کے ہر ایک کے حوالہ کر دیے۔"، [2]

3. وہ ضلع جو دارالخلافے کے قریب اور ارد گرد ہو، اس کی آمدنی فوج پر خرچ کی جاتی تھی، سرکاری زمین۔ (جامع اللغات)

انگریزی ترجمہ[ترمیم]

a house of brick or stone; house, dwelling, habitation, mansion; the districts or land attached to and in the vicinity of a town (the revenues of which were devoted to the support of the military garrison)

مترادفات[ترمیم]

مَحَل، مَکان، قَصْر

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ( 1983ء، ساتواں چراغ، 40 )
  2. ( 1880ء، تواریخ عجیب، 206 )